سرحدوں پر حملے کے بعد بھارتی فوج کی ایسی شرمناک حرکت جان کر آپ کا بھی خون کھول اٹھے

راولپنڈی  بھارت کی خطے کے امن کو تار تار کرنے کی کوششیں جاری ہیں اور لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر گزشتہ کئی ہفتوں سے بلا اشتعال فائرنگ کے بعد اب ایک بس کو نشانہ بنایا گیا ہے جس کے نتیجے میں 7 مسافر شہید اور 7 زخمی ہوئے ہیں۔ یہی نہیں بلکہ بھارت نے بے شرمی اور سنگدلی کی انتہاءکرتے ہوئے واقعے میں زخمی ہونے والے افراد کو لے جانے والی ایمبولینس کو بھی نہ بخشا اور گولہ باری کا نشانہ بنایا۔پاک فوج کے تعلقات عامہ کے ادارے (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارت نے وادی نیلم کے علاقے ڈھنڈیال میں ایل او سی کے قریب ایک مسافر بس پر بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی جس کے نتیجے میں 3 مسافر موقع پر ہی شہید ہو گئے جبکہ ایک مسافر ہسپتال لے جاتے ہوئے خالق حقیقی سے جا ملا۔ فائرنگ کے اس واقعے میں 7 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جنہیں مظفر آباد میں موجود فوجی ہسپتال میں منتقل کیا گیاہے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بھارت نے اسی پر بس نہیں کیا بلکہ درندگی، بے شرمی اور سنگدلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے واقعے میں زخمی ہونے والے افراد کو ہسپتال لے جانے والی ایمبولینس پر بھی گولہ باری کی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول کے نکیال ، کریلا ،جندروٹ اورپونچھ سیکٹرز پر شہری آبادی کو نشانہ بناتے ہوئے بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ بھی جاری ہے اور اس دوران بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ بھارتی فورسز منڈہول، دربازار، جاوڑہ اور سحرککوٹہ کی آبادیوں کوبھی نشانہ بنارہی ہیں۔
راولاکوٹ میں درا شیر خان اور بھمبر کے سماہنی بھنڈیالہ سیکٹرکو بھی نشانہ بنا یا گیا تاہم پاک فوج کی جانب سے بھرپور جوابی کارروائی کی گئی اور فائرنگ کا منہ توڑ جواب دیا گیا تاہم ابھی تک کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔