کفرٹوٹاخداخدا کرکے، صدرممنون حسین کےنئےحکم نےکئی لوگوں کی نیندیں اڑادیں

اسلام آباد (نیوزڈیسک) صدر مملکت نے کمپنیز آرڈیننس دو ہزار سولہ جاری کردیا۔ آرڈیننس کے تحت پاکستانیوں کو آف شور کمپنیاں ظاہر کرنا ہونگی۔ پاکستان میں 32 برس بعد بالآخر کمپنیز قوانین میں تبدیلی کردی گئی۔ کمپنیز آرڈیننس 2016 جاری کردیا گیا۔ فراڈ، منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے کیلئے قوانین سخت کر دیئے گئے۔ پاکستانی شہریوں کو بیرون ملک سرمایہ کاری یا آف شور کمپنیوں کی تفصیلات ظاہر کرنا ہونگی۔نئے قوانین کے تحت گلوبل رجسٹر قائم کیا جائے گا۔ مقامی و غیر ملکی کمپنیاں سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کو مکمل معلومات دینے کی پابند ہونگیں۔ کمپنی سے مالی فائدہ اٹھانے والوں، ڈائریکٹرز، آفیسرز کا مکمل ڈیٹا جمع کرانا ہوگا۔ اس سلسلے میں ایس ای سی پی کو تحقیقات کے اختیارات حاصل ہونگے۔نئے قوانین سے کمپنیوں کی رجسٹریشن آسان اورنئی الیکٹرانک ٹیکنالوجی کے استعمال کی حوصلہ افزائی ہے، جس سے چھوٹے و متوسط کاروبار اور کارپوریٹ سیکٹرزکو بھی کام میں سہولت ہوگی۔(خ.و،ث)