30 ارب ہرجانہ: شہبازشریف سے جواب طلب

 اسلام آباد: عدالت نے  پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کی جانب سے دائر ہرجانے کے دعوے پر وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف سے جواب طلب کر لیا ہے۔ایکسپریس نیوزکے مطابق اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت کے جج کامران بشارت مفتی نے وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کے خلاف جہانگیر ترین  کے 30 ارب روپے ہرجانے کے دعوے کی سماعت کی۔سماعت کے دوران جہانگیرترین کے وکیل نے کہا کہ شہباز شریف نے ان کے موکل جہانگیر ترین پر قرضے معاف کرانے کے جھوٹے الزام لگائے، جس سے ان کی ساکھ کو نقصان پہنچا۔ جہانگیر ترین نے جھوٹے اور بے بنیاد الزامات پر وزیر اعلیٰ کو سیکشن 8 کے تحت نوٹسز بھیجے گئے لیکن ان کی جانب سے معافی نہیں مانگی گئی۔ عدالت نے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو 12 نومبر کے لیے نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے جواب بھی طلب کرلیا ہے۔واضح رہے کہ شہباز شریف نے بھی عمران خان کے خلاف 26 ارب روپے سے زائد ہرجانے کا دعویٰ کررکھا ہے۔