آرمی چیف کی مدت ملازمت کی توسیع صحافی کے سوال پرجانئے اسحاق ڈا ر نے کیا جواب دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع اور خیبرپختونخوا میں گورنر راج کے حوالے سے سوال کا جواب گول کرگئے۔ گزشتہ روز پریس کانفرنس کے دوران جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا حکومت صوبہ خیبرپختونخوا میں گورنر راج کا کوئی ارادہ رکھتی ہے تو انہوں نے کہا کہ ہم نے جذبہ خیر سگالی کے تحت خیبرپختونخوا اور بلوچستان میں حکومتیں قائم نہیں کی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم جے یو آئی ف کے ساتھ مل کر 2013ءکے انتخاب کے بعد خیبرپختونخوا میں حکومت بناسکتے ہیں لیکن ہم نے جذبہ خیرسگالی کے تحت صوبے کی اکثریتی پارٹی پاکستان تحریک انصاف کو حکومت بنانے کی دعوت دی۔ انہوں نے کہا کہ اسی طرح بلوچستان میں بھی ہم اس پوزیشن میں تھے کہ اپنی حکومت بناسکیں کیونکہ ہم وہاں سب سے بڑی پارٹی تھے لیکن ہم نے وہاں جذبہ خیر سگالی کے تحت بلوچستان سے تعلق رکھنے والی جماعت نیشنل پارٹی کو حکومت بنانے کی دعوت دی اور انہیں پہلے عوامی خدمت کا موقع دیا۔

جب ان سے ایک بار پھر پوچھا گیا کہ کیا آپ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کررہے ہیں اور کیا آپ وزیراعلیٰ پنجاب اور وزیر داخلہ کے ہمراہ آرمی چیف سے جو ملاقات کی تھی وہ اسی سلسلے کی ایک کڑی تھی، اس جواب میں انہوں نے کہا کہ ڈان میں شائع ہونےو الی متنازعہ خبر کے حوالے سے یہ طے ہوا تھا کہ ان تحقیقات سے فوج کو آگاہ کیا جائے گا جب وزیراعظم نواز شریف نے چوہدری نثار کو کہا کہ وہ فوج کو آگاہ کریں تو اس وقت انہوں نے اکیلے جانا مناسب نہ سمجھا اور مجھے اور وزیراعلیٰ پنجاب جو اس وقت اسلام آباد میں موجود تھے ان کو بھی ساتھ لے گئے اور اس ملاقات کا یہی ایک ایجنڈا تھا۔

Facebook Comments