عمران خان 2 نومبر کو جلسہ کریں گے یا نہیں فیصلہ کر لیا

 اسلام آباد: 

چیرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ ایک بار پھر پوری قوم کو 2 نومبر کے اسلام آباد دھرنے میں بھرپور شرکت کی دعوت دیتا ہوں اور کوئی طاقت ہمیں دھرنے سے نہیں روک سکتی۔بنی گالہ میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اربوں روپے کی کرپشن میں پکڑے گئے ہیں، نواز شریف نے کرپشن کے لئے ادارے اور دو قومی نظریے کو تباہ کردیا ہے، نواز شریف کے پاس احتساب یا استعفیٰ دینے کے علاوہ کوئی دوسرا آپشن موجود نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت ہمارے پرامن جمہوری حق کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہے ہیں، اگر ہمارے کارکنوں کی پکر دھکڑ بند نہ ہوئی تو انتشار پھیلے گا، ہمارے لوگ رکنے والے نہیں ہیں اور انہیں کوئی روک نہیں سکے گا۔ نواز شریف ضمیروں کے سودا گر ہیں،اُن کی بادشاہت کی مذمت کرتا ہوں، وہ فوجی آمر کی پیداوار اور انہوں نے ہمیشہ امیرالمومنین بننے کی کوشش کرتے ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ہ قوم ڈوب رہی ہے، ڈھائی کروڑ بچے اسکول سے باہر ہیں، ملک کی ایک بڑی آبادی غذائی قلت کا شکار ہے، لوگ بھوکے مر رہے ہیں اور اسٹیٹس کو کے لوگ کہہ رہے ہیں کہ اسلام آباد بند ہو جائے گا تو ان کے بچے اسکول کیسے جائیں گے، کیا وہ ڈھائی کروڑ بچے پاکستانی نہیں جو اسکول نہیں جا رہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ان لوگوں کا ضمیر اور اخلاقیات مر چکی ہے اور میں اسٹیٹس کو کے لوگوں کو تکلیف دوں گا۔ کل جو شہباز شریف نے ڈرامے سے بھرپور تقریر کی انہیں تو ایوارڈ ملنا چاہیئے، شہباز شریف نے 6 ارب روپے کے قرضے لے رکھے تھے انہیں تو 2013 میں الیکشن لڑنے کی اجازت ہی نہیں ملنی چاہیئے تھی، شہباز شریف کو ان کی کل کی فلم پر انہیں بھارتی فلموں میں کام کرنا چاہیئے ۔

چیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ 2 نومبر کے دھرنے کے لئے میرا عزم اور ولولہ ہر روز بڑھتا جا رہا ہے، تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کو ایک بار پھر  دھرنے میں بھرپور طریقے سے شرکت کی دعوت دیتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس کے ہاتھ ماڈل ٹاؤن کے افراد کے خون میں رنگے ہوئے ہیں، اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ آپ پھر سے لوگوں پر تشدد کریں گے تو یہ قوم آپ کو کبھی معاف نہیں کرے گی، آپ لوگ عوام کے ٹیکس کے پیسوں سے تنخواہیں لیتے ہیں نا کہ شریف خاندان اپنی جیب سے آپ لوگوں کو پیسے فراہم کرتا ہے، اس لئے پنجاب اور اسلام آباد پولیس سے کہتا ہوں کہ شریف خاندان کے گلو بٹ بننے کے بجائے آئین اور قانون کے تحت قوم کی خدمت کریں۔