اقتصادی راہداری ،مغربی روٹ،چین کاحتمی اعلان سامنے آگیا

اسلام آباد (نیوزڈیسک)چینی سفارت خانہ کے ترجمان نے واضح کیا ہے کہ سی پیک پورے پاکستان کے لئے ہے اور اس سے مغربی حصوں کے لوگوں سمیت تمام پاکستانی عوام کو فوائد حاصل ہوں گے ٗپاکستان کے مغربی حصوں میں سی پیک منصوبہ جات پر پیشرفت ہو رہی ہے ٗ منصوبے پر مسلسل پیشرفت اور عوام کو جلد از جلد فوائد پہنچانے کیلئے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے کیلئے پرعزم ہیں۔ بدھ کو یہاں ایک بیان میں ترجمان نے کہا کہ حال ہی میں ایک اردو اخبار میں یہ رپورٹ ہوا ہے کہ پاکستان میں چینی سفیر نے وزیراعلیٰ خیبر پختونخواء اور کے پی کے حکومت کو آگاہ کیا کہ پاک چین اقتصادی راہداری میں مغربی روٹ موجود نہیں ہے۔ ترجمان نے کہا کہ یہ جھوٹ اور غلط رپورٹنگ ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین اور پاکستان نے سی پیک پر پیشرفت کے بارے میں مواصلاتی اور رابطہ کاری کا مضبوط نظام وضع کر رکھا ہے۔ 12 نومبر 2015ء کو سی پیک کی مشترکہ تعاون کمیٹی کے پانچویں اجلاس نے ’’کثیر راستوں کے ساتھ ایک راہداری‘‘ کے اصول کی منظوری دی جس کا مقصد پاکستان کی سماجی و اقتصادی ترقی بالخصوص مغربی اور شمال مغربی علاقوں کو براہ راست فائدہ پہنچانا اور گوادر بندرگاہ کے لئے موثر رابطہ فراہم کرنا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ پانچویں جے سی سی اجلاس میں مونو گرافک سٹڈی آف ٹرانسپورٹ پلان کی منظوری دی گئی جس میں واضح طور پر ذکر ہے کہ برہان ۔ ڈی آئی خان ۔ کوئٹہ ۔ سوراب سیکشن سی پیک کے بڑے رابطہ مقامات کے مابین اشد درکار مواصلاتی راستہ فراہم کرے گا اور پاکستان کے مغربی علاقوں کو ملائے گا۔ چینی سفارت خانہ کے ترجمان نے کہا کہ سی پیک پورے پاکستان کے لئے ہے اور اس سے مغربی حصوں کے لوگوں سمیت تمام پاکستانی عوام کو فوائد حاصل ہوں گے۔ دونوں اطراف کی مشترکہ کوششوں سے سی پیک منصوبہ جات پاکستان بھر میں چل رہے ہیں اور سی پیک پر جامع انداز میں عمل درآمد کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے مغربی حصوں میں سی پیک منصوبہ جات پر پیشرفت ہو رہی ہے۔ روزگار کے کئی منصوبہ جات پر عمل درآمد بھی کیا جا چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سی پیک پر مسلسل پیشرفت اور عوام کو جلد از جلد فوائد پہنچانے کیلئے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے کیلئے پرعزم ہیں۔