پاک بھارت کشیدگی؛ وزیراعظم کی زیر صدارت سیاسی قائدین کا اجلاس

 اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف کی زیرصدارت سیاسی قائدین کا اجلاس آج ہو رہا ہے جس میں لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی جانب سے بلا اشتعال فائرنگ کے بعد کی صورتحال اور آئندہ کے ردعمل پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔لائن آف کنٹرول کی صورتحال پر بات چیت کے لئے تمام جماعتوں کے سربراہ وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں سر جوڑ کر بیٹھیں گے۔ وزیراعظم نواز شریف کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں شرکت کے لئے سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے شاہ محمود قریشی اور شیریں مزاری جب کہ پیپلز پارٹی کی جانب سے بلاول بھٹو، خورشید شاہ اور اعتزاز احسن اجلاس میں شرکت کریں گے۔ اس کے علاوہ اجلاس میں محمود خان اچکزئی،غلام احمد بلور، میرحاصل بزنجو، سراج الحق، پرویز الہٰی چوہدری شجاعت حسین، مولانا فضل الرحمان، فاروق ستار اور پارلیمنٹ میں فاٹا کے پارلیمانی رہنما بھی شریک ہوں گے۔سیکرٹری خارجہ اعزاز احمد چوہدری اجلاس میں تمام جماعتوں کو ایل او سی پر ہونے والی بھارتی جارحیت سے متعلق تفصیلی بریفنگ دیں گے جب کہ مسلح افواج کی جوابی کارروائی کے حوالے سے بھی اراکین کو آگاہ کیا جائے گا۔ اجلاس میں تمام سیاسی جماعتوں کے قائدین ملک کی موجودہ صورتحال پر اپنی آراء کا اظہار کریں گے۔حکومت کی جانب سے کانفرنس میں عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کو دعوت نہیں دی گئی جس پر عمران خان نے شدید ناراضگی کا اظہار کیا اور اپنی ٹویٹ میں کہا کہ شیخ رشید کے ساتھ جو امتیاز برتا گیا وہ ایک تنگ نظر اور عدم برداشت پر مبنی ذہنیت کو ظاہر کرتا ہے جس سے قومی اتفاق رائے پیدا نہیں ہوسکتا۔