اچانک نئی خبرآگئی ۔ وفاقی حکومت نے اہم دفاعی چیز گروی رکھنے کی منظوری دیدی

اسلام آباد : صکوک بانڈز فروخت کرکے قرضہ لینے کیلئے موٹروے ٹو اور جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ گروی رکھوادیئے گئے۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ ماہ انٹرنیشنل اسلامک بانڈمارکیٹ میں صکوک بانڈز فروخت کرکےحکومت نے ایک ارب ڈالر کا قرضہ حاصل کیا۔

باخبر ذرائع کے مطابق صکوک بانڈزکےذریعےیہ قرض لینےکیلئےحکومت نےلاہور تا اسلام آباد 375کلو میٹرطویل موٹروے ٹوکوگروی رکھوایا۔

ادھراسٹیٹ بینک کےمطابق جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ کراچی کوبھی گروی رکھوا دیاگیا ہے۔ذرائع کےمطابق پاکستان کی مارکیٹ میں فروخت شدہ صکوک بانڈزکیلئےموٹروے ٹوپہلے ہی گروی تھا تاہم مقامی صکوک بانڈز ہولڈرز کو نیا اثاثہ گروی رکھنےکیلئے راضی کیاگیا اور اس طرح مقامی صکوک بانڈزکیلئےموٹروے ٹوکی جگہ کراچی کا ائیرپورٹ گروی رکھوادیاگیا۔

اس سلسلےمیں دس نومبر کواسٹیٹ بینک میں ہونے والےصکوک بانڈز ہولڈرزکے اجلاس میں اس کی منظوری دی گئی۔ وفاقی سیکریٹری خزانہ ڈاکٹر وقار مسعود نےاے آر وائی نیوز سےگفتگو کرتےہوئےخبرکی تصدیق کی۔

اُن کاکہنا تھاکہ موٹروے ٹو اور جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ مساوی قیمت کےہیں،حکومت اثاثہ بدلنا چاہ رہی تھی۔جبکہ عالمی سطح پرصکوک بانڈکی ضمانت کیلئےموٹروے ٹو گروی رکھنا تھا۔