مودی کا بلوچستان پر بیان ہمارے ’’را‘‘ سے متعلق مؤقف کی تائید ہے، سرتاج عزیز

اسلام آباد(نیوزڈیسک) مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نے اپنے بیان میں بلوچستان کا ذکر کرکے ہمارے ’’را‘‘ کی صوبے میں سرگرمیوں سے متعلق مؤقف کی تائید کی ہے۔قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا کہ نہتے کشمیری شب وروز بھارتی فوج کے مظالم کے خلاف مظاہرے کررہے ہیں اور بھارتی فوج مظالم کے ذریعے ان کی آواز دبانے کے لیے مصروف ہے، مظاہروں میں اب تک 70 سے زائد بے گناہ کشمیری شہید اور 600 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں اور 37 روز سے مکمل کرفیو نافذ کرنے کے ساتھ ساتھ میڈیا بلیک آؤٹ بھی جاری ہے۔سرتاج عزیز نے کہا بھارت کو تسلیم کرنا ہوگا کہ مسئلہ کشمیر گولیوں سے حل نہیں ہوسکتا بلکہ اس کا واحد حل پاک بھارت سنجیدہ مذکرات ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیراعظم نے اپنے بیان میں بلوچستان کا ذکر کرکے ہمارے بھارتی خفیہ ایجنسی کی سرگرمیوں سے متعلق مؤقف کی تائید کی ہے۔مشیر خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی مقبوضہ کشمیرمیں مظالم کو چھپانے کے لیے جھوٹ کا سہارا لے رہے ہیں اور دنیا کی توجہ اپنے کیے مظالم سے ہٹانے کی ناکام کوشش کرر ہے ہیں۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں حق خود ارادیت کے لیے غیر مسلح تحریک چل رہی ہے اس تحریک کو دہشت گردی سے نہیں جوڑا جاسکتا۔

Facebook Comments