سول و عسکری قیادت کا دہشتگردی کے خاتمے کیلئے بھرپور طاقت استعمال کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد(نیوزڈیسک) سانحہ کوئٹہ کے بعد امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لینے اور نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد سے متعلق اہم اجلاس ہوا جس میں سول و عسکری قیادت نے دہشت گردی کے خاتمے کے لئے بھرپور طاقت کا استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعظم نوازشریف کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد کا تفصیلی جائزہ لینے کے لیے وزیراعظم ہاؤس میں اعلی سطح کا اجلاس ہوا جس میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل رضوان اختر، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان، وزیرخزانہ اسحاق ڈار سمیت اعلیٰ سیاسی و عسکری شخصیات نے شرکت کی۔ اجلاس کے دوران وزیرداخلہ اور مشیر قومی سلامتی لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ نے شرکا کو ملکی سیکیورٹی صورتحال اور دہشت گردوں کے خلاف جاری کارروائیوں سے متعلق بریفنگ دی۔اجلاس کے دوران سول و عسکری قیادت نے دہشت گردی کے خلاف مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا اور ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کے لئے بھرپور طاقت استعمال کرنے کے علاوہ مختلف فیصلے کئے۔ ذرائع کے مطابق وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار اجلاس کے دوران کئے گئے فیصلوں پر قومی اسمبلی کو اعتماد میں لیں گے۔