سا نحہ کوئٹہ، ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ وزیراعظم کو پیش

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ بزدل دہشتگرد جمہوریت کے ستونوں پر حملہ کر رہے ہیں۔ دہشتگرد مذموم نظریات سے ریاست اور معاشرے کو نشانہ بنانا چاہتے ہیں۔ دہشتگرد ہمارے حوصلے پست نہیں کر سکتے کیونکہ پوری پاکستانی قوم متحدہ ہے۔ دہشتگردوں کے مکمل خاتمے تک انکا پیچھا کریں گے،میڈیا رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز وزیراعظم نواز شریف سے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کی ملاقات ہوئی۔ جس میں سانحہ کوئٹہ کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیر داخلہ نے سانحہ کوئٹہ سے متعلق ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ وزیراعظم کو پیش کر دی ہے۔ وزیر داخلہ نے سانحہ کوئٹہ کی مختلف پہلو¶ پر تحقیقات سے متعلق وزیراعظم کو بریفنگ دی۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ سانحہ کوئٹہ میں بیرونی ہاتھ ملوث ہونا خارج از امکان نہیں ہے۔ اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ دہشتگردوں کے مکمل خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ ملک کی عوام کی جان و مال کے تحفظ کے لئے ہر ممکن اقدام اٹھائے جائیں اور انٹیلی جنس اداروں اور صوبوں کے درمیان روابط بہتر بنائے جائیں۔ دریں اثنا ءاے این پی کے رکن قومی اسمبلی غلام احمد بلور نے بھی وزیر اعظم سے ملاقات کی ۔ ملاقات میں قومی سلامتی اہمیت کے امور کوئٹہ دھماکہ اور موجودہ سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ پاکستان مضبوط، متحرک اور مستحکم سیاسی مستقبل کی طرف رواں دواں ہے، دہشتگرد پاکستان کو مستحکم ہوتا نہیں دیکھ سکتے۔ اس لئے آسان اہداف کو نشانہ بنا رہے ہیں۔ دہشتگرد جمہوریت کے ستونوں پر حملہ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دہشتگرد مذموم نظریات سے ریاست اور معاشرے کو نشانہ بنانا چاہتے ہیں، دہشتگردی کے خلاف ضرب عضب ، قومی ایکشن پلان ہر صورت جاری رہے گا۔ وزیراعظم نے مزید کہا کہ دکھ کی اس گھڑی میں پوری قوم متحد ہے، دہشتگردی اور انتہا پسندی کے خلاف پوری قوم کا عزم غیر متزلزل ہے۔ اس موقع پر غلام احمد بلور نے کہا کہ دہشتگردوں کی ان بزدلانہ کارروائیوں سے ہمارے حوصلے پست نہیں ہو سکتے، دہشتگردی کے خلاف پوری قوم متحد ہے اور اس ناسور کو جڑ سے اکھاڑ کر دم لیں گے۔ وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ دہشتگردوں کے مکمل خاتمے تک انکا پیچھا کریں گے عوام کے جان و مال کے تحفظ کے لئے ہر ممکن اقدام اٹھائے جائیں۔

Facebook Comments