سندھ میں تبدیلی ،آصف زرداری کی” نئی گیم “شروع

اسلام آباد (نیوزڈیسک) پیپلزپارٹی کے سربراہ آصف زرداری نے سیاست کے میدان میں نیاگیم پلان تشکیل دیدیاجس کے تحت اب بلاول بھٹو پارٹی کے اہم فیصلے کرینگے جبکہ وہ خود دبئی میں ہی رہائش پذیررہیں گے اوروہاں سے ہی بلاول بھٹوزرداری کی رہنمائی کرینگے ۔.سابق صدر آصف علی زرداری نے پیپلزپارٹی کی تشکیل نو اور اہم معاملات پر بلاول بھٹو کے فیصلوں کو ویٹو نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وہ اس بات پر خوش ہیں کہ بلاول بھٹو زرداری کو اپنے فیصلوں میں مکمل خود مختار ہونا چاہئے اور اس سلسلے میں انہوں نے پارٹی چیئرمین کو مکمل آزادی دی ہے کہ وہ اپنے وژن اور ترجیحات کے مطابق پیپلزپارٹی کی تشکیل نو کریں۔ پیپلزپارٹی کے ایک اہم رہنما نے نام نہ بتانے کی شرط پربتایاکہ بلاول بھٹو کے خودمختار فیصلوں کی ایک مثال سندھ کے وزیراعلیٰ اور اس کی کابینہ میں تبدیلی ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کو ہٹانے میں آصف علی زرداری کا کوئی عمل دخل نہ تھا اور یہ فیصلہ بلاول بھٹو نے خود سے کیا ہے۔ آصف علی زرداری جو کہ گزشتہ روز 61 برس کے ہوگئے ہیں‘ بتدریج اہم ذمہ داریوں سے پیچھے ہٹنا شروع کردیا ہے۔ سینئر رہنما نے بتایا کہ آصف زرداری اب پیچھے ہٹتے چلے جارہے ہیں کیونکہ بلاول بھٹو پارٹی چیئرمین کے معیار پر پورا اترتے ہیں۔ رہنما نے بتایا کہ آصف زرداری میں اقتدار کا کوئی لالچ نہیں‘ وہ جانتے ہیں کہ بلاول مکمل بااختیار ہو اور وہ صرف رائے دینے کی حد تک اثرانداز ہوں۔ آصف زرداری جب محسوس کریں گے کہ بلاول بھٹو کو ان کے تجربات سے استفادہ حاصل کرنے کی اب ضرورت نہیں تو وہ اس بھی پیچھے ہٹ جائیں گے۔