بلاول بھٹوزرداری کوقومی اسمبلی میں لانے کی تیاریاں ،دبئی اجلاس میں فیصلہ

لاہور(نیوزڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا دبئی میں اجلاس‘ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو قومی اسمبلی کا الیکشن لڑانے کا فیصلہ۔ ذرائع کے مطابق دبئی میں ہونے ہونے والے اجلاس میں سابق صدر آصف علی زرداری‘ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری‘ لیڈر آف اپوزیشن سید خورشید شاہ‘ سنیٹر اعتزاز احسن‘ شیری رحمن‘ فرحت اللہ بابر سمیت تمام اہم لیڈر شپ دبئی کے اجلاس میں شریک ہیں  اور انہوں نے مشترکہ فیصلہ کیا ہے کہ چیئرمین بلاول بھٹوزرداری کو لاڑکانہ 207 سے قومی اسمبلی کا الیکشن لڑایا جائے تاکہ وہ قومی اسمبلی میں اہم کردار ادا کریں۔

ayaz somo mna

اس سلسلے میں ایاز سومرو کو این اے 207 سے جلد مستعفی کروایا جائے گا اور چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو وہاں سے بلامقابلہ منتخب کروا کر قومی اسمبلی میں بھیجا جائے گا اور ایاز سومرو کو وزیراعلیٰ سندھ کا مشیر برائے قانون کی ذمہ داری دی جائے گی۔ ذرائع نے بتایا مائنس نوازشریف فارمولا بھی دبئی اجلاس میں زیر بحث آیا اور فیصلہ کیا گیا کہ ہر حال میں جمہوریت کو بچایا جائے گا مگر نوازشریف کی حمایت نہیں کی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق آزادکشمیر میں اسلام آباد حکومت کی جانب سے کی گئی دھاندلی پر شدید احتجاج کیا گیا اور بلاول بھٹو زرداری نے اسلام آباد حکومت اور الیکشن کمیشن کی دھاندلی پر احتجاج کیا۔ انہوں نے کہا دو دن قبل الیکشن کمیشن کے عملہ سے دھاندلی کروائی گئی۔ دبئی اجلاس میں سندھ میں رینجرز کے اختیارات میں توسیع پر بھی بات کی گئی۔ اس موقع پر چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے کراچی کے امن کو مدنظر رکھتے ہوئے رینجرز کے حق میں بات کی جبکہ سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ رینجرز صرف کراچی‘ سندھ میں کیونکر کام کر رہی ہے پنجاب اور بلوچستان میں کیوں نہیں کر رہی۔